Home / قواعد و ضوابط

قواعد و ضوابط

چیچہ وطنی نیوز اس ویب سائٹ پر تمام مواد عوام کو بلا معاوضہ بہم پہنچاتا ہے۔ اس مواد سے استفادہ کرنے والوں پر درج ذیل پالیسیوں کا اطلاق ہوتا ہے:

شیئرنگ پالیسی
کمنٹس پالیسی
پرائیویسی پالیسی
شکایت کرنے کا طریقہ کار

اگر آپ اس ویب سائٹ سے استفادہ کر رہے ہیں تو آپ ان تمام پالیسیوں سے اتفاق کرتے ہیں۔ مزید برآں آپ درج ذیل نقاط کو بھی سمجھ رہے ہوتے ہیں:

چیچہ وطنی نیوز ویب سائٹ پر کسی دوسری ویب سائٹ کا لِنک موجود ہونے کا مطلب یہ ہرگِز نہیں ہے کہ چیچہ وطنی نیوز اُس ویب سائٹ کی ذمہ داری لیتی ہے۔ مذکورہ ویب سائٹس کا استعمال آپ کی اپنی صوابدید پر ہے اور اس کے ذمہ دار آپ ہوں گے۔

چیچہ وطنی نیوز کی ویب سائٹ پر شائع ہونے والا تحریری مواد، تصاویر، گرافکس ، آڈیو اور وڈیو فائلز وغیرہ ‘جیسا ہے’ اور ‘جس حالت میں دستیاب ہے’ کی بنیاد پر فراہم کیے جاتے ہیں۔ چیچہ وطنی نیوز اس بات کی ضمانت نہیں دیتا کہ یہ مواد ہمیشہ مکمل حالت میں دستیاب ہوگا اور یہ کہ یہ اُسی یو آر ایل پر دستیاب ہو گا جس پر ابتدائی طور پر شائع کیا گیا تھا۔

چیچہ وطنی نیوز اس بات کی ضمانت نہیں دے سکتی کہ ہماری ویب سائٹ پر دستیاب کمپیوٹر فنکشنز ہر صورت میں کام کرتے رہیں گے، یا یہ کہ چیچہ وطنی نیوز کی ویب سائٹ اور اس کے سرورز پر کسی قسم کا کوئی وائرس یا بگز نہیں ہو سکتے۔ یہ آپ کی ذمہ داری ہے کہ آپ ہمارے ہاں شائع ہونے والے مواد وغیرہ کو اپنی ضرورت کے مطابق استعمال کرنے کے لیے کسی بھی وائرس چیک کا بندوبست خود کریں گے۔

چیچہ وطنی نیوز ان پالیسیوں میں کبھی بھی، کسی بھی قسم کی ترامیم کرنے کا حق رکھتا ہے۔

وضاحتیں

ویب سائٹ سے مراد چیچہ وطنی نیوز ڈاٹ کام اور اسکا فیس بک پیج ہے۔

وزٹر سے مراد وہ شخص ہے جو چیچہ وطنی نیوز کی ویب سائٹ پر کسی بھی مشین بشمول ڈیسک ٹاپ، لیپ ٹاپ، آئی پیڈ، ٹیبلٹ اور ہمہ اقسام فون کے ذریعے پہنچ کر وہاں موجود مواد سے ذاتی طور پر استفادہ کرتا ہے۔

مواد کا مطلب ہے کوئی بھی تحریر، تصویر، گرافک، ساونڈ فائل، وڈیو، جو چیچہ وطنی نیوز نے ویب سائٹ پر وزٹرز کے استفادے کے لئے مہیا کی ہے۔

استفادہ کرنے سے مراد ہے تحریر پڑھنا، تصاویر یا وڈیو دیکھنا، ساونڈ فائل سننا یا گیم یا اپلیکیشن کو پلے کرنا۔

شیئرنگ پالیسی

ویب سائٹ کے تمام وزٹر اس پر شائع ہونے والے مواد کے لنکس کو اپنے ذاتی سوشل میڈیا پلیٹ فارم یعنی فیس بک ، ٹوئیٹر ، انسٹاگرام و دیگر پر شیئر کر سکتے ہیں۔ شئیرنگ متعلقہ مواد کے آخر میں دی گئی شیئرنگ کی سہولت کے ذریعے ہی کی جانی چاہیئے۔ مواد کو کاپی کر کے اپنے ذاتی سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر دوبارہ شائع کرنا منع ہے خواہ اس میں مواد کے اصل منبع یعنی چیچہ وطنی نیوز کا حوالہ ہی کیوں نہ موجود ہو۔

ویب سائٹ پر شائع شدہ مواد کو وزٹر کسی غیر منافع بخش تحقیقی یا تعلیمی مقصد کے لئے صرف اس شرط پر استعمال کر سکتے ہیں کہ وہ اس مواد کے اصل منبع (یعنی چیچہ وطنی نیوز کی ویب سائٹ) کا مکمل اور واضح حوالہ دینے کی پابندی کریں گے۔

کوئی بھی وزٹر ویب سائٹ پر شائع ہونے والے مواد کو کاپی کر کے اپنی ذاتی یا تنظیمی یا کمپنی کی کسی بھی قسم کی ویب سائٹ، بلاگ پوسٹ وغیرہ پر دوبارہ شائع نہیں کرسکتا، خواہ اس میں مواد کے اصل منبع یعنی چیچہ وطنی نیوز کی ویب سائٹ کا حوالہ ہی کیوں نہ موجود ہو۔

کوئی بھی وزٹر ویب سائٹ پر شائع ہونے والے مواد کو کاپی کر کے نہ تو کسی اخبار، رسالے یا جریدے میں شائع کرسکتا ہے اور نہ ریڈیو، ٹی وی پر نشر کرسکتا ہے خواہ اس میں مواد کے اصل منبع یعنی چیچہ وطنی نیوز کی ویب سائٹ کا حوالہ ہی کیوں نہ موجود ہو۔ دوبارہ اشاعت کے لیے اجازت درکار ہے.

کمنٹس پالیسی

ویب سائٹ کے ہر وزٹر کو مختلف پیجز پر دی گئی کمنٹس (رائے) دینے کی سہولت کو استعمال کرنے کی مکمل آزادی ہے تاہم ان کومنٹس کو ادارہ موڈریٹ کرتا ہے اور اسے یہ مکمل حق حاصل ہے کہ وہ بغیر وجہ بتائے کوئی بھی کمنٹ شائع نہ کرے۔

چیچہ وطنی نیوز اختلاف رائے اور اظہار کی آزادی پر مکمل یقین رکھتا ہے۔ ادارہ کمنٹس کو اشاعت کے لئے پرکھتے ہوئے عام طور پر درج ذیل اصولوں کو مد نظر رکھتا ہے۔

کمنٹس صرف زیر بحث موضوع سے متعلق ہی ہونے چاہیں۔

کمنٹس کرنے والوں کو اس سہولت کو اپنی رائے دینے کے علاوہ کسی بھی ذاتی مقصد کی تکمیل کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں۔ جیسے کومنٹس سیکشن میں اپنے کاروبار یا کسی اور ایسے مقصد کی تشہیر کرنا جس کا جاری بحث سے کوئی تعلق نہ ہو۔

کمنٹس تضحیک آمیز اور گالی گلوچ والا نہیں ہونا چاہیے، اس کا مقصد کسی کی ذات پر کیچڑ اچھالنا، ڈرانا دھمکانا یا دل آزاری کرنا نہیں ہونا چاہیے۔

کمنٹس کے ذریعے کسی دوسرے یوزر کی پرایئویسی کی خلاف ورزی نہیں ہونی چاہیے۔

کمنٹس پاکستان کے قوانین کے خلاف نہیں ہونا چاہیے۔

یہی تمام اصول اس ویب سائٹ کے مختلف فیس بک پیجز اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر موجود کمنٹس دینے کی سہولیات پر بھی لاگو ہوتے ہیں۔

چیچہ وطنی نیوز پوری کوشش کرتا ہے کہ وہ اپنی پالیسی کے خلاف دیئے گئے کمنٹس کو ان سوشل میڈیا پلیٹ فارمز سے ہٹا دے تاہم ایسا ہر وقت ممکن نہیں ہو سکتا۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر کمنٹس دینے کی سہولت کو تکنیکی وجوہات کی بنا پر چیچہ وطنی نیوز یوزر کے کمنٹس شائع ہونے سے قبل موڈریٹ نہیں کرسکتا اس لئے وہ ان کمنٹس سے ہونے والے کسی ممکنہ نقصان یا دل آزاری کا ذمہ دار نہیں۔

کمنٹس پالیسی کی خلاف ورزی کی شدت یا تعداد کو مد نظر رکھتے ہوئے ادارہ کسی وزٹر کو مستقل طور پر بلاک کرنے کا حق رکھتا ہے۔

پرائیویسی پالیسی

چیچہ وطنی نیوز اس بات کا پابند ہے کہ وہ وزٹرز کی ذاتی معلومات (جو وزٹرز نے ادارے کو با رضا جمع کروائیں یا جو ان کے ویب سائٹ پر آنے کے باعث خودبخود سسٹم میں جمع ہو گئیں) ان کی اجازت کے بغیر نہ تو افشا کرے اور نہ کسی تیسرے فریق سے شیئر کرے۔

ادارہ اس بات کا پابند ہے کہ وہ وزٹرز کی مہیا کی گئی ذاتی معلومات صرف انہی مقاصد کے لئے استعمال کرے جن کی وضاحت کر کے ان معلومات کو ان سے حاصل کیا گیا تھا۔

ویب سائٹ پر کئے جانے والے کسی بھی انٹرایکٹو عمل ( جیسے سروے) کے ذریعے وزٹرز کے بارے حاصل کی گئی معلومات صرف انہی مقاصد کے لئے استعمال کی جائیں گی جن کی وضاحت اس عمل کے قواعدو ضوابط میں واضح کی گئی ہوں گی۔ ان عملوں پر یہی قواعدوضوابط لاگو ہوں گے جو عمومی پالیسی سے مختلف ہو سکتے ہیں۔

ہم اپنی ویب سائٹ کو موئثر طور پر چلانے کے لئے کُکیز کا استعمال کرتے ہیں۔ ہیکنگ یا کسی حادثے کے نتیجے میں افشا ہونے والی وزٹرز کی معلومات سے ہونے والے کسی بھی قسم کے نقصان کا ذمہ دار ادارے کو نہیں ٹھہرایا جا سکتا۔

شکایت کرنے کا طریقہ کار

وزٹر ادارے کے کسی بھی عمل کے بارے میں اپنی شکایت درج کروا سکتے ہیں۔ شکایت درج کروانے کے لئے ہم سے رابطہ کریں. رابطے کا طریقہ کار “ہم سے رابطہ” پیج پر موجود ہے.

شکایت موصول ہونے کے ایک ماہ کے اندر ادارہ اپنے متعلقہ عملے اور اگر ضروری ہوا تو قانونی ماہرین کا موقف دریافت کر کے شکایت کنندہ کو جواب ارسال کرے گا۔